Official Website

اگر کرپشن کرتا تو آف شورز کمپنی بنانے کی ضرورت نہ پڑتی، علی زیدی

10

پشاور: وفاقی وزیر علی زیدی کا کہنا ہے کہ اگر کرپشن کرتا تو آف شورز کمپنی بنانے کی ضرورت نہ پڑتی۔پشور میں سرحد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے دورے موقع پر بات کرتے ہوئے وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ علی حیدر زیدی کا کہنا تھا کہ ہم میری ٹائم سے کرپشن کا خاتمہ کردیا، اگر کرپشن کرتا تو آف شورز کمپنی بنانے کی ضرورت نہ پڑتی، کرپشن کی کوئی پیشکش قبول نہیں کی، ورنہ ابھی میرے گلیات اور مری میں بنگلے ہوتے، نیب آرڈیننس میں کئی اداروں کو ہٹایا گیا تا کہ وہ خود محکمانہ کاروائی کریں، آف شور کمپنی اگر ٹیکس چرانے کیلئے بنائے گئی ہو تو ایکشن لیا جائے۔علی زیدی نے بتایا کہ پورٹ پر کنٹینر متعلقہ نمبر کے ساتھ ہی خالی ہوتے ہیں کسی کو بھی کام نکلوانے کے لئے کرپشن نہیں کرنی پڑتی، سیلر شناختی کارڈ کو کمپیوٹرائزڈ کردیا ہے، سمندری جہاز عملے کی تمام تفصیلات کو آن لائن کردیا ہے، مجھے وزارت سے ہٹا بھی دیا جائے پھر بھی جہاز برتھ بولی کے بغیر نہیں ہوگی۔وفاقی وزیرکا کہنا تھا کہ فیری سروس کو اجازت مل گئی ہے، فیری ٹرمینل بن چکا ہے جہاں پر تمام اداروں کا عملہ بھی تعینات کیا ہے، فیری سروس کے ذریعے حج اور عمرہ زائرین کو بہت آسانی ہوگی، ہم چاہتے ہیں کہ فیری سروس میں نجی کمپنیاں حصہ لیں کہیں ملک میں دوسری پی آئی اے نہ بن جائے۔